اگر آپ اپنی جنسی کارکردگی کو بہتر بناتے ہوئے زیادہ سے زیادہ بڑھانے کے خواہش مند ہیں تو پریشان ہونا چھوڑ دیں، آپ ہی کی طرح بہت سارے لوگ اِس الجھن کا شکار ہیں۔ بہت سے آدمی ہمیشہ اسی فکر میں مبتلا رہتے ہیں کہ آخر کس طرح اپنی موجودہ کارکردگی کو بہتر سے بہترین بنائیں جو اِس سلسلے میں انہیں جو بھی مسائل درپیش ہیں انہیں حل کرتے ہوئے ایسے طریقے ڈھونڈیں جن سے اُن کی شریک ِ حیات ہمیشہ اُن کے ساتھ ہم بستری میں خوش اور مطمین رہیں۔

اِس سے پہلے کہ ہم اِن مسائل کے حل کی جانب بڑھیں، آپ ہمیشہ اِس بات کو ذہن میں رکھیں کہ ہر انسان میں جنسی خواہش دوسرے سے مختلف ہوتی ہے۔بالکل اسی طرح ہر شخص میں جنسی تعلق قائم کرنے کی خواہش وقت کے ساتھ تبدیل بھی ہوتی رہتی ہے اور اِس کا تعلق اُن حالات و واقعات اور طرز ِ زندگی سے جڑا ہوتا ہے جو وہ گزارتے ہیں۔ جنسی رغبت میں کمی کی وجہ طرز ِ زندگی، رشتوں کے مسائل جیسے کہ جذباتی وابستگی کا نہ ہونا، بات چیت میں رکاوٹ ہونا اور شریک ِ حیات کے ساتھ جاری مسائل و مشکلات میں کمی واقع نہ ہونا ہیں۔اگر چہ مارکیٹ میں مردوں کی جنسی صلاحیت بڑھانے کے لیے بہت سی ادویات دستیاب ہیں لیکن کچھ ایسے طریقہ کار بھی موجود ہیں جن پر عمل کر کے آپ بغیر کسی دوا کے ہم بستری میں زیادہ بہتر اور لمبی کارکردگی دکھا سکتے ہیں۔

یہاں یہ جاننا نہایت ضروری ہے کہ آپ کا آلہ تناسل خون کے دباؤ کے تحت کام کرتا ہے لہذا آپ کے لیے اپنے جسم میں خون کی گردش کے نظام کو بہترین انداز میں برقرار رکھنے کی ضرورت ہے۔ اگر یہ کہا جائے کہ آپ کی دل کی صحت کے لیے جو اچھا ہے وہی آپ کی جنسی صحت کے لیے بھی بہترین ہے تو ہر گز غلط نہ ہو گا۔ ذیل میں کچھ طریقے بیان کیے گئے ہیں جو آپ کی اِس سلسلے میں مدد کر سکتے ہیں۔

1۔ خود کو ایکٹو رکھنا یقینی بنائیں

صحت کو بہتر بنانے کے لیے  cardiovascular   ایکسرسائز (قلبی ورزش)سے بہتر کوئی اور عنصر نہیں ہے۔ اگرچہ جنسی عمل آپ کے دل کی دھڑکن کو اوپر کی جانب رواں رکھتا ہے وہیں باقائدگی سے کی جانے والی ورز ش آپ کے دل کی صحت کو بہتر بناتے ہوئے آپ کی جنسی کارکردگی کو بہتر بناتی ہے۔

دن میں کم از کم 30   منٹ ایسی ورزش کریں جس سے آپ کے جسم سے پسینہ خارج ہو جیسے کہ جاگنگ، سوئمنگ، سائیکل چلانا وغیرہ۔ ایسا کرنے سے آپ اپنی جنسی خواہش میں واضح بہتری محسوس کریں گے۔

2۔ ہمیشہ درست غذا کا انتخاب کریں

یہ بات بالکل ٹھیک ہے کہ درست غذا آپ کو خون کے بہتر بہاؤ میں مدد کرتی ہے۔ اگر چہ پیاز اور لہسن کھانے کے بعد آپ کو اپنی سانس میں ناگوار بو محسوس ہوتی ہے لیکن یہ دونوں آپ کے جسم میں خون کے بہتر بہاؤ میں مدد کرتے ہیں۔ ایسے پھل جن میں پوٹاشیم کی مقدار زیادہ ہو جیسے کہ کیلا، وہ بھی آپ کا خون کا دباؤ کم کرنے میں مدد دیتے ہیں اور اِس کے نتیجے میں آپ کے جنسی اعضاء اور جنسی کارکردگی دونوں میں بہتری واقع ہوتی ہے۔ ایسی غذا جس میں وافر مقدار میں وٹامنB-1   موجود ہوتا ہے (بشمول مونگ پھلی اور لوبیا)وہ آپ کے نروس سسٹم کو بہتر اور تیز تر بنانے میں مدد کرتی ہیں۔ اِس میں آپ کے دماغ کے ذریعے آپ کے آلہ تناسل کو بھیجے جانے والے سگنلز بھی شامل ہیں۔انڈوں میں بڑی مقدار کے اندر دیگر وٹامنB   مو جود ہوتے ہیں جو آپ کے جسم میں ہارمونز کا توازن برقرار رکھتے ہیں۔ یہ آپ کو ذہنی دباؤ کم کرنے میں بھی مدد کرتے ہیں جو کہ عام طورپر آلہ تناسل کی سختی کے مسائل کا سبب بنتے ہیں۔

۔ تناؤ /دباؤ کو دور بھگائیں3

ذہنی دباؤ یا تناؤ کی کیفیت آپ کی مجموعی صحت پر بری طرح اثر انداز ہوتی ہے۔ اس سے دل کی دھڑکن میں اضافہ ہوتا ہے (منفی انداز میں)اور اِس سے پیدا ہونے والا خون کا دباؤ آپ کی جنسی خواہش اور کارکردگی کو نقصان پہنچانے کا سبب بنتا ہے۔ اس سے نہ صرف کسی بھی مرد کو آلہ تناسل کی بہترین سختی حاصل کرنے اور برقرار رکھنے میں مشکل کا سامنا کرنا پڑتا ہے بلکہ جنسی عمل کی مستی و سرشاری کی کیفیت کے حصول میں بھی دشواری پیش آتی ہے۔

جیسا کہ آپ کو اوپر بتایا گیا ہے کہ ورز ش کی مدد سے اِس دباؤ اور تناؤ کی کیفیت پر قابو پایا جا سکتا ہے اور اپنی مجموعی صحت کو بھی بہتر بنایا جا سکتا ہے۔ آپ کو چاہئے کہ اپنے شریک ِ حیات کے ساتھ بطور ِ خاص اس ذہنی دباؤ کے بارے میں بات چیت کریں،اِس سے نہ صرف آپ کو دباؤ کم کرنے میں معاونت ملے گی بلکہ آپ کے اپنے شریک ِ حیات کے ساتھ تعلقات میں بھی بہتری واقع ہو گی۔ اگر آپ اکیلے اپنے بل بوتے پر اِس طرح کے مسائل کے حل کے لیے کوششیں کرتے ہیں تو اِس بات کا پورا امکان ہے کہ آپ دوسری غلط عادات جیسے کہ تمباکو نوشی وغیرہ کی جانب راغب ہو جائیں جو کہ آپ کی جنسی خواہش اور کارگردگی کے لیے بہت نقصاندہ ہیں۔

۔ اپنی بری عادات کو الوداع کریں 4

تمباکو نوشی کے بارے میں عام طور پر یہی تاثر پایا جاتا ہے کہ یہ آپ کے دباؤ کو کم کرنے میں مدد کرتی ہے لیکن حقیقت تو یہ ہے کہ تمباکو نوشی مردوں کی جنسی صحت اور کارکردگی پر انتہائی مضر اثرات مرتب کرتی ہے۔ اِس سے خون کی نالیاں پتلی ہو سکتی ہیں اور نتیجے کے طور پر آپ مردانہ بانجھ پن کا شکار بھی ہو سکتے ہیں۔ لہذا اگر آپ تمباکو نوشی کرتے ہیں تو بہتر ہو گا کہ آپ اسے کم کرتے ہوئے بالکل ختم کر دیں اور پھر کچھ ہی عرصے میں آپ خود اپنی جنسی رغبت اور کارکردگی میں بہتری محسوس کریں گے۔ ذہنی و جسمانی دباؤ سے محفوظ رہنے کا سب سے بہترین حل خود کو صحت مند سرگرمیوں میں مشغول کرنا ہے جیسا کہ آپ اپنے ساتھی کے ساتھ چہل قدمی، جاگنگ یا سائیکلنگ پر جائیں۔

.5 صبح کی نرم دھوپ آپ کے لیے صحت کا پیغام ہے

جی ہاں! یہ حقیقت ہے کہ صبح سویرے نکلنے والی نرم دھوپ آپ کے جسم میں melatonin   نامی ہارمون پیدا کرتی ہے۔اب آپ یقینا یہی سوچ رہے ہوں گے کہ اِس ہارمون اور آپ کی جنسی زندگی میں کیا تعلق ہے؟؟؟تو جناب!یہ ہارمون melatonin   ہماری نیند کو بہتر بنانے کے ساتھ جنسی خواہش کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے،جس کا مطلب یہ ہوا کہ کم melatonin    آپ کے اندر جنسی رغبت کو اپنے بہترین ٹریک پر برقرار رکھتا ہے۔لہذا ہم آپ کو تجویز دیتے ہیں کہ صبح سویرے اٹھیں اور سورج کی نرم دھوپ سے لطف اندوز ہونے کے ساتھ اپنی جنسی کارکردگی کو بھی بہتر بنائیں۔

6۔ شریک ِ حیات کو ہمیشہ پوری توجہ دیں

شریک ِ حیات کی جنسی لذتوں کے بارے میں آگاہ ہونا اور انہیں پورا کرنے کے لیے آمادہ رہنا، شریک ِ حیات کے ساتھ ساتھ آپ کو بھی جنسی لذت دیتا ہے۔جنسی عمل سے قبل شریک ِ حیات کے ساتھ بات چیت کریں تا کہ اگر کسی قسم کی کوئی جھجھک آپ دونوں کے درمیان موجود ہے تو وہ دور ہو اور آپ کو جنسی عمل کے دوران کسی بھی قسم کی رکاوٹ یا ہچکچاہٹ کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

اگر مذکورہ بالا عوامل پر عمل کرنے کے باوجود بھی آپ کی جنسی کارگردگی میں بہتری نہیں آ رہی ہے تو ایسا ممکن ہے کہ آپ کسی بڑے مسئلے سے دوچار ہوں، ایسے میں آپ کو کسی ایکسپرٹ کی مدد کی ضرورت ہو سکتی ہے۔erectile dysfunction  (آلہ تناسل کی سختی کے مسائل)اور peyronie's desease   (آلہ تناسل کا ڈھیلا پن) اور دیگر بیماریوں سے نمٹنے کے لیے آپ کو طبی مدد درکار ہوتی ہے۔ اس سلسلے میں بنا کسی شرم اور جھجھک کے اپنے معالج سے رابطہ کریں۔

https://www.healthline.com/health/male-sexual-performance#give-your-partner-attention